Jump to content


Photo

Coconut oil


  • Please log in to reply
No replies to this topic

#1 mahfuzurrehman

mahfuzurrehman

    Active Member

  • Junior Member
  • 591 posts

Posted 28 June 2018 - 12:09 PM

ہمارے یہاں جب ناریل کے تیل کا ذکر آتا ہے تو فوراً ہی بالوں کی نشوونماذہن میں آجاتی ہے مگر آج ہم ناریل کے تیل کے انسانی صحت پر پڑنے والے مثبت اثرات کے بارے میں آپ کوبتانا چاہیں گے۔ ناریل کا تیل ہر طرح سے اپنی افادیت رکھتا ہے ۔ جہاں خشک ناریل انسانی صحت کے لیے فائدے مند ہے وہاں اس کا تیل بھی انسان کو اندرونی اور بیرونی طور پر فائدہ پہنچاتا ہے۔ برصغیر پاک و ہند کے کئی علاقوں میں اسے کھانے اور مالش کرنے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔

کھانے کیلئے ناریل کا تیل

 

ناریل کا تیل کھانا پکانے کے لیے استعمال کیا جائے تو یہ بہت فائدہ مند ہے کیونکہ یہ کھانوں میں عمدہ چکنائی کا کام انجام دیتا ہے۔اس کو مکھن کے متبادل کے طور پر بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔اس لیے کوشش کریں کہ صحت کومدِ نظر رکھتے ہوئے ان تمام کھانوں میں، جن میں مکھن کا استعمال ہو اس کی جگہ ناریل کا تیل ڈالیں۔ مکھن کی جگہ اسے استعمال کرنے سے کھانوں کے ذائقے میں کچھ تبدیلی تو محسوس ہوگی لیکن صحت کے لیے ذائقہ کی اس تبدیلی کی عادت ڈال لیں۔کیک بنانے میں بھی ناریل کا تیل استعمال کیا جاسکتا ہے۔ یہ بلڈ شوگر کوقابو میں رکھنے میں مدد دیتا ہے۔اگر آپ اپنے کھانوں میں ناریل کے تیل کا مستقل طور پر استعمال کرتے ہیں تو اس سے ہاضمہ فعال رہتا ہے اور طبیعت میں گرانی دورہوتی ہے۔اس کے علاوہ تیل سے معدے میں پیداہونے والی چکناہٹ کھانا جلد ہضم کرنے میں مدد دیتی ہے۔اگر آپ وزن کم کرنے کے لیے ابلی ہوئی سبزیاں کھاتے ہیں تو ان پر ناریل کا تیل اور سمندری نمک کا چھڑکاؤ کرکے کھانا فائدہ مند ثابت ہوگا کیونکہ یہ وٹامن اور منرلز کو اچھی طرح جذب کرتا ہے۔اس کے علاوہ روزانہ کھانے سے پہلے ایک چمچہ ناریل کا تیل پینامیٹابولزم کو تیز کرتا ہے۔ یہ تیزابیت کی وجہ سے خراب ہونے والے پیٹ کے اندرونی حصے کو جلدی ٹھیک کرتا اور السر سے بچاتا ہے۔ایک تحقیق سے یہ بھی پتا چلاہے کہ ناریل کا تیل جسم میں گلوکوزکے لیول کو بہتر بناتا ہے اور اس کے ساتھ ٹوٹل کولیسٹرول کی مقدار کو کم کرتا ہے۔جو افراد اپنے کھانے میں ناریل کا تیل استعمال کرتے ہیں ان کا دماغ تیزی سے کام کرتا ہے ، وہ دن بھر چاق وچوبند اور پُرجوش نظر آتے ہیں۔

آنکھوں کے حلقے اورجھریوں کا خاتمہ

ناریل کے تیل کی ہلکے ہاتھ سے باقاعدہ مالش کی جائے تو آنکھوں کے گرد موجود سیاہ حلقے اور جھریوں کے خاتمے میں مدد ملتی ہے۔ اس کے علاوہ اسے بغیر کسی دوسری چیزکی ملاوٹ کے چہرے اور ہاتھوں پر لگانے سے جھریوں اور لائنوں کاخاتمہ ہوجاتاہے۔

کان کے دردمیں آرام

تھوڑے سے ناریل کے تیل میں ایک یا دو لہسن کے جوے ڈال کر ہلکا سا گرم کرکے اس تیل سے کانوں کے اطراف مالش کریں، اس سے کانوں کا انفیکشن اور دردختم ہوگا۔

داد اور خارش کے نشان

داد اور خارش کی بیماری جب چلی جاتی ہے تواس کے نشان سالہاسال تک جسم سے نہیں جاتے۔ تھوڑا سا ناریل کا تیل لے کر داد والے مقام پر لگاکرپٹی باندھ دیں، مسلسل ایک ماہ تک یہ عمل کرنے سے آپ اس کے مثبت نتائج کو حیران کن پائیں گے۔

کیل مہاسے دور بھگائیں

ناریل کا تیل جہاں مختلف اقسام کے وٹامنز اور منرلزسے بھرپور ہوتا ہے، وہیں اس میں اینٹی بیکٹیریل اوراینٹی فنگل اجزاء شامل ہوتے ہیں۔ اسے کھانے سے ہمارے ہارمونز متوازن رہتے ہیں جس کی وجہ سے دانے نہیں نکلتے اور اس کا باقاعدہ استعمال کیل مہاسوں کو بننے سے روکتا ہے۔ اس کے علاوہ اسے دانوں پر لگایا جائے تو یہ اینٹی بیکٹیریل کا کام سرانجام دیتا ہے۔ ناریل کا تیل جسم پر ہونے والی خارش کے اثر کوکم کرنے کے ساتھ ایچ آئی وی وائرل کے خطرے کو بھی کم کرتا ہے۔

بخار کو کم کرتا ہے

ناریل کاتیل بخار کو کم کرنے میں مددگار ثابت ہوتاہے، آیورویدک کے مطابق زمانہ قدیم سے ہی اسے بخار کی شدت کوکم کرنے کے لیے استعمال کیا جاتارہا ہے۔ اس کے علاوہ اگر جسم کا کوئی حصہ جل جائے تو اس جگہ ناریل کا تیل لگانے سے فوری آرام ملتا ہے۔

قدرتی سن بلاک

ناریل کا تیل قدرتی سن بلاک کا کام کرتا ہے، اس کا استعمال سورج کی تمازت سے آپ کے رنگ و روپ کو گہنانے نہیں دیتا۔یہ جسم میں وٹامن ڈی کی کمی کو پورا کردیتا ہے جبکہ عام طور پر کوئی سن بلاک ایسا نہیں کرپاتا۔ہماری صحت اور جسمانی ضروریات کے لیے ناریل کے تیل کےان گنت فوائد ہیں جن میں سے چندکا ذکر ہم اُوپر کرچکے ہیں جبکہ کچھ کامختصراًذیل میں کیے دیتے ہیں کیونکہ لوگوں کی ایک بڑی تعداد اب بھی اس کے کئی فوائد سے لاعلم ہے۔

1)Alzheimer اور دماغی کمزوری کو ٹھیک کرتا ہے، اس کے علاوہ دماغی قوت اور صلاحیت کو بڑھاتا ہے۔

2)دل کی بیماریوں اور بلند فشارِخون یاہائی بلڈ پریشر سے بچاتا ہے۔

3)پیشاب کی نالیوں اور گْردں کے انفیکشن سے بچاتا ہے۔

4)جسم کے کسی بھی حصے کی سوزش اور جوڑوں کے درد کو کم کرنے کے ساتھ ہڈیوں کے امراض کو بھی ٹھیک کرتا ہے۔

5)کینسر سے بچاؤ اور اس کے علاج میں بھی معاون ثابت ہوتا ہے۔

6)قوتِ مدافعت کو بڑھاتا ہے۔

7)توانائی اور قوتِ برداشت کو بڑھاتا ہے۔

8)پِتے کے امراض اور لبلبے کی سوزش کو دور کرتا ہے۔

9)دانتوں اور مسوڑھوں کی بیماریوں کو دور کرتا اور دانتوں کو چمکدار بناتا ہے۔

10)بلڈ شوگر / ذیابیطس ٹائپ 2 کے مریضوں کے لیے نہایت مفید ہے۔

11)جسم سے زائد چربی کو کم کرتا اور پٹھوں کو مضبوطی عطا کرتا ہے۔

آخر میں یہ بات بھی بتاتے چلیں کہ ناریل کا تیل مردوںاور خواتین دونوں کے لیے یکساں مفید ہے۔

گلے کے لیے مفید

ناریل کے تیل میں اینٹی وائرل کمپاؤنڈ پائے جاتے ہیں جو کہ گلے میں ہونے والی سوزش اور درد میں آرام پہنچاتے ہیں۔ ایک کھانے کا چمچہ ناریل کا تیل لے کر اس میں لیموں کارس ملا کر گرم کریں، پھراس مکسچر سے گلے پر اچھی طرح مالش کریں۔ ایسا کرنے سے گلے میں ہونے والی تکلیف اور خراش میں کمی واقع ہوگی۔

512803_4999201_updates.jpg





0 user(s) are reading this topic

0 members, 0 guests, 0 anonymous users